پاکستان کے موجودہ حکمرانوں کے لیے ایک عبرت آموز واقعہ

اسٹینڈرڈ

میں تجھ کو بتاتا ہوں تقدیرِ امم کیا ہے

شمشیرو سناں اول، طاوءس رباب آخر

پاکستان کے موجودہ حکمرانوں کے لیے ایک عبرت آموز واقعہ

 

Advertisements

2 responses »

  1. شمشير و سناں اول ، طاؤس و رباب آخر ۔

    اس وقت المدينة الطيبة الثانی پاکستان کو ايک مرد قلندر، مرد مجاھد، مرد مومن، فقير و درويش کی قيادت کی ضرورت ھے،جو نہ صرف نہايت سادہ مزاج، عاجز و مسکين ، سادہ لباس ، آور قناعت پسند، ان ميں کسر نفسی ھو ، جو جناح + اقبال ھو آور وہ ھيں سر زيد حامد ۔ جن ميں امت مسلمہ کو متحد کرنے آور سينہ تانے بے خوف و خطر ان طاقتوں کو چيلنج کرنے کی صلاحيتيں موجود ھيں آور جنہوں نے ان تمام صيہونی متحدہ طاقتوں کو چيلنج کر رکھا ھے ، آؤ جس نے ھم سے ٹکر لی اسے سيسہ پلائي ھوئي ديوار سے سر ٹکرانا ھو گا ۔ آور تمہيں اس پاکستانی قوم کو فتح کی خوشخبرياں احاديث کی روشنی ميں ياد دلانے والے محمدی سپاھی سر زيد حامد کی قيادت ميں تيار قوم سے مقابلہ کرنا ھوگا ۔ آؤ کفار و مشرکين و منافقين آؤ ھم سر بکفن تيار ھيں ۔ اس نڈر محمدی سپاھی ھيں آور کسی بھی مخالفت کی پروا نہيں کرتے ۔ يہ افواج پاکستان ، يہ ماؤں کے شير ، دلير ، جوان ، يہ اقبال کے شاھين ، عقابی نظريں جماۓ تمہارے منتظر ھيں ۔ آؤ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ تميں بتا ديں کہ ھم نے آحد و بدر ، خندق و حنين ميں کيا کيا جرآت مندانہ مظاھرے کيۓ ، آؤ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ تميں ايک دفعہ پھر اللہ آور اسکے حبيب صلی اللہ عليہ و سلم کا جلال ديکھنے کو ملے گا ۔ يہ پاک فوج سمندروں کے سينے چير کر آگے سے آگے بڑھنے کو تيار حکم کی منتظر ھے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اللہ اکبر۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اللہ اکبر ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ھم مصطفوی۔۔۔۔۔۔۔۔ مصطفوی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ مصطفوی ھيں ۔ آؤ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ يہ مصطفوی جان نثار تمہارے عہد ۔۔۔۔ و ميثاق و اتحاد کی اينٹ سے اينٹ بجا دينے تمہيں دندان شکن جواب دينے کو بے چين و بے تاب ھے ۔۔۔۔۔۔۔۔ھم غزواة بدر و حنين و احزاب کی ياد تازہ کرنے کا عزم ليۓ بے خوف و خطر اس آگ ميں کود پڑنے کو کمر کس چکے ھيں ،ھم چاک و چوبند ھيں ۔
    ميں نہايت عاجزی و انکساری سے مصروف رھتے ھيں، کسر نفسی ان کی پہچان ھوتی ھے
    آج کے قائد سر زيد حامد ميں تمام قائيدانہ صلاحيتيں موجود ھيں ايک انتہائي بيدار مغز آور ارادوں ميں اولو العزمی پائي جاتی ھے ، قدرت نے انہيں گہری سياسی بصيرت آور اعلی درجے کی انتظامی صلاحيتوں سے نوازہ ھے ۔ آور عدل ِ فاروقی کے جلد نافذ العمل آور خلافت راشدہ کی بجالی کے ليۓ بے چين ھو ۔

    شمشير و سناں اول ، طاؤس و رباب آخر ۔
    مگر اس مرد قلندر کر تو طاؤس و رباب سے دور کا بھی واسطہ نہيں ، ان کی نظر ميں تو بس شمشير و سناں ھی ھے ۔

    انہيں جہاد فی سبيل اللہ کا اعزاز پہلے بھی حاصل ھے آور اب پھر غزوہ ء ھند کے سپہ ء سالار ھونے کا بھی ، اللہ ان کا حامی و نا صر ھے۔ قائد وہ ھوتا ھے ، غازی بھی آور مجاھد بھی ، جو دلوں پر راج کرتا ھے۔ ۔
    ھزاروں سال نرگس اپنی بے نوری پہ روتی ھے
    بڑی مشکل سے ھوتا ھے چمن ميں ديدہ ور پيدا
    انشاء اللہ وہ دن دور نہيں ، يہ سب ہمارے پيارے پاکستان ميں جلد ، بہت جلد ھونے والا ھے۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s